Samandar Ishq Ki Gehrai

Samandar Ishq Ki Gehrai Ko Na Naap

Tasuwar Main Apnay Mehboob Ko Rakh Aur Doobta Jaa..!

سمندر عشق کی گہرائی کو نہ ناپ

تصور میں اپنے محبوب کو رکھ اور ڈوبتا جا

Lafz Karain Gay Jaanay Ka

Lafz Karain Gay Jaanay Ka Ishaara

Tum Aankhain Parhna Aur Ruk Jaana..!

لفظ کریں گے جانے کا اشارہ

تم آنکھیں پڑھنا اور رک جانا

Sarapa Sooz Hoti Hai

Sarapa Sooz Hoti Hai Mujasam Saaz Hoti Hai

Muhabbat Har Dharaktay Qalb Ki Awaaz Hoti Hai.

سراپا سوز ہوتی ہے مجسم ساز ہوتی ہے

محبت ہر دھڑکتے قلب کی آواز ہوتی ہے

Too Mojzay Sakoot Kay

Too Mojzay Sakoot Kay Ham Ko Bhe Kar Ataa

Ham Haal Dil Sunain Magar Guftago Na Ho..!

‏تُو معجزے سکوت کے ہم کو بھی کر عطا

ہم حالِ دل سنائیں مگرگفتگو نہ ہو

Tum Jo Kaho To Zindagi Ki Agli

Tum Jo Kaho To Zindagi Ki Agli Saans Laina Bhe Bhool Jaon

Bas Tujh Ko Bhool Jana Mere Bas Ki Bat Nahin..!

تم جو کہو تو زندگی کی اگلی سانس لینا بھی بھول جاؤں

بس تجھ کو بھول جانا میرے بس کی بات نہیں